English NameKoala

Group of AnimalMammal

Pluralکوآلے ۔ کوآلوں

Maleجی ہاں

Femaleمادہ کوآلا

Baby Animal's Nameطفلِ کوآلا

Soundسرسراہٹ۔خہسراہٹ

No Urdu Nameکوآلا ۔ کوالا ۔ کوآلا بھالو(مستعمل)

Image

Group of Animal 1ممالیہ

یہ جانور درختوں پر رہتا ہے۔ اس کا تعلق ممالیہ جانوروں سے ہے۔ یہ پتّے کھا کر گزارا کرتا ہے۔ اس جانور کی دُم نہیں ہوتی اور کان لمبے، گول اور کافی پھیلے ہوئے ہوتے ہیں۔ یہ جانور آسٹریلیا کے مشرقی اور جنوبی علاقوں میں پایا جاتا ہے خاص کر ایڈیلیڈ (Adelaide) سے کیپ یارک پیننسولا (Cape York Peninsula) تک کے علاقے میں پایا جاتا ہے۔ ایک بڑے کوالا کا وزن 12 کلو گرام تک اور اُس کی مادہ کا وزن 8.5 کلو گرام تک بھی ہوسکتا ہے۔ عام طور پر جو جانور پایا جاتا ہے اُس کا وزن 6.5 کلو گرام اور اس کی مادہ کا وزن 5 کلو گرام تک ہوتا ہے۔ اس کا رنگ عموماً بھورا ہوتا ہے۔ کوآلا یا کوالا ایک سبزہ خور ہے جو مشرقی آسٹریلیا میں پایا جاتا ہے۔ یہ حیاتیاتی تنوع کی درجہ بندی میں Phascolarctidae خاندان میں پایا جانے والا واحد جانور ہے۔ کوآلا کو عام طور پر" کوآلا بھالو"بھی کہا جاتا ہے کیونکہ یہ دیکھنے میں ایک چھوٹے بھالو سے مشابہت رکھتا ہے۔ یاد رہے کہ اس کو بھالو اس کی بھالو سے مشابہت کی وجہ سے کہا جاتا ہے ورنہ یہ حقیقی بھالو نہیں ہے۔ اس کا درست نام صرف کوآلا ہی ہے۔ کوآلا کے جسم پر گندمی مائل پارے(چمک دار) کی مشابہت والی نرم فر ہوتی ہے اور اس کی چہرے کی نسبت بڑی، گلابی یا کالی ناک ہوتی ہے۔ کوآلا کے پنجے انتہائی تیز ہوتے ہیں جس کی مدد سے وہ درختوں وغیرہ پر چڑھنے اور پتّے نوچنے کا کام لیتے ہیں۔ ان کی سُننے اور سونگھنے کی حس نہایت تیز ہوتی ہے جبکہ ان کی دیکھنے کی صلاحیت عمدہ نہیں ہوتی۔ کوآلا عموماً رات کے وقت متحرک رہتے ہیں۔ یہ درختوں پر رہتے ہیں اور عام طور پر زمین پر اترنا پسند نہیں کرتے۔ یہ عام طور پر پتّے کھا کر گذارا کرتے ہیں اور خاص طور پر گوند کے کے پتّے یہ نہایت رغبت سے کھاتے ہیں۔ کوآلا عادتاً تنہائی پسند ہوتے ہیں لیکن پھر بھی اپنی عام زندگی میں دوسرے قریبی کوآلوں سے رابطہ رکھنا ضروری سمجھتے ہیں۔ یہ رابطہ جسمانی اور صوتی دونوں صورتوں میں ہو سکتا ہے۔ کوآلا کی افزائشِ نسل کے بارے یہ معلومات ہیں کہ 35 دن کے حمل کے بعد پیدا ہونے والا کوآلا کی جسامت صرف "ایک" کا چوتھائی(تقریباً سات سینٹی میٹر تک) ہوتی ہے اور پیدائش کے وقت اس کے کان، آنکھیں اور بال نہیں ہوتے۔ یہ پیدائش کے فوراً بعد اپنی ماں کے پیٹ پر موجود تھیلی میں گُھس جاتا ہے اور وہیں سے یہ خوراک حاصل کرتا ہے۔ 12 مہینے یہ نومولود اپنی ماں کے پیٹ پر تھیلی میں گذارتا ہے اور اس کے بعد 2 سال تک بلوغت کی عمر کو پہنچ جاتا ہے لیکن افزائشِ نسل کا عمل عام طور پر 4 سال کی عمر کے بعد ہی شروع کرتا ہے۔ کوآلا حالیہ دور میں بقائی خطرے سے دوچار جانور کی قسم سمجھی جانے لگی ہے۔ ان کی بقا کے خطرے سے متعلق کہا جاتا ہے کہ ان کے رہائشی جنگلات ناپید ہوتے جارہے ہیں اور کئی مقامات پر صرف چند ہی کوآلا باقی بچ رہے ہیں۔ لیکن یہ بھی معلومات ہیں کہ بعض جگہیں جیسے جزیرہ فرانسیسی میں بہت زیادہ کوآلا کی آبادی موجود ہے لیکن ان کی بقا اس لیے خطرے میں ہے کہ جنگلات میں دستیاب خوراک یعنی پتّے اور پھل وغیرہ روز بروز کم ہوتے جارہے ہیں۔ درختوں کی کٹائی کی وجہ سے انھیں رہائش برقرار رکھنے میں بھی مشکلات کا سامنا ہے۔ ایک تحقیقی رپورٹ میں یہ بات دیکھی گئی ہے کہ پچھلے بیس سال میں آسٹریلیا میں کوآلا کی آبادی میں بے انتہا کمی واقع ہوئی ہے اور ان کے رہائشی علاقوں میں سے 1800 سے زائد مقامات اب رہائش کے قابل نہ رہنے کے سبب تباہ ہو گئے ہیں۔ یہ تحقیقی رپورٹ آسٹریلیا کی "فاؤنڈیشن برائے کوآلا" نے مُرتب کی تھی جس کے مطابق یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ کُرۂ ارض پر صرف 50000 کوآلا باقی بچ گئے ہیں۔ کوآلا کی ان علاقوں میں بڑھتی آبادی کی وجہ سے یہ پہلو بھی اجاگر ہو رہا ہے کہ ان کی خوراکی(غذائی) ضروریات کو پورا کرنے کے لیے درختوں کی کٹائی پر پابندی لگائی گئی تھی مگر اسی خوراکی ضرورت کے بڑھنے کی وجہ سے متعلقہ درختوں کی قسم، یعنی گوند کے درخت یہاں ختم ہوتے جا رہے ہیں۔ مقالہ نگار: سر مورٹن، آدم (نومبر 10، 2009ء) "صرف پچاس ہزار کوآلا باقی" (انگریزی میں) مقالہ: "آسٹریلیا کے حیوانات" ،شایع ٢٠٠٩ءUniversity of Queensland

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter