• آنکھیں جیسے کومل کرنیں‘ چاندی جیسے ہاتھ
    پریتم تم کو چاند کہوں یا پورے چاند کی رات
    جمیل الدین عالی
  • آنکھیں پھوٹیں جو کچھ بھی دیکھا ہو
    ابھی آتا ہوں دشت ایمن سے
    داغ
  • دیکھیں ہیں راہ کس کی یارب کہ اختروں کی
    رہتی ہیں باز آنکھیں چندیں ہزار ہر شب
    میر
  • روتے روتے سجائی آنکھیں
    کوئی جانے کہ آئی ہیں آنکھیں
    قلق
  • زلف کالی ہے ذقن دُرگا کُند
    رخ جو سورج ہے تو ہندو آنکھیں
    الماسِ درخشاں
  • ضعف سے کچھ نظر نہیں آتا
    کررہی ہیں ڈگر ڈگر آنکھیں
    مہتاب داغ
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 61

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter