• لڑاؤ غیر سے آنکھیں کہو یہ ہم سے آہ
    کہ تھا ہمیں تو تمہارا ہی دھیان کوٹھے پر
    نظیر
  • دل بھی کیسی شے ہے دیکھو پھر خالی کا خالی
    گرچہ اس میں ڈآلے میں نے آنکھیں بھر بھر خواب
    سعد ‌اللہ ‌شاہ
  • کیااس کی ڈریں ابروئے خمدار سے آنکھیں
    مردوں کی جھپکتی نہیں تلوار سے آنکھیں
    معروف
  • میں ہونگابام پر دیکھیں گے سب کیونکر نہ یہ کہیے
    سنا ہے میں نے آنکھیں سر پہ ہونگی اہل محشر کی
    رشید(پیارے صاحب)
  • میری آنکھیں پونچھنے والے ذرا دامن بچا
    آگ کا شعلہ ہیں آنسو‘ قطرۂِ شبنم نہیں
    طفیل ‌ہوشیار ‌پوری
  • ہجوم از بس تماشائی کا تیرے قد پہ ہے پیارے
    بسان دستہ نرگس ز سرتاپا رسی آنکھیں
    سودا
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 61

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter