• تھی نگاہ حسن میں کتنی مرے دل کی بساط
    ایک آنسو تھا جو گر کر جذب دامن ہو گیا
    اعجاز نوح
  • روکے کسے کسے یہ مری آستیں فغاں
    وہ تو جدا چلا مرے آنسو جدا چلے
    فغان
  • پرو دیئے مرے آنسو ہوا نے شاخوں میں
    بھرم بہار کا باقی رہے نگاہوں میں
    پروین ‌شاکر
  • راکھ ہوئیں آنکھوں کی شمعیں آنسو بھی بے نور ہوئے
    دھیرے دھیرے میرا دل پتھر سا ہوتا جاتا ہے
    بشیر بدر
  • محبت میں اک ایسا وقت بھی دل پر گزرتا ہے
    کہ آنسو خشک ہوجاتے ہیں طغیانی نہیں جاتی
    جگر
  • سن کے میرے حال کو اس بت کے آنسو گر پڑے
    درد کی تقریر نے پتھر کو پانی کردیا
    عاشق
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 29

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter