• دل سے جلتی ہوئی آنکھوں نے جو پانی مانگا
    ضبط الفت نے کہا قید ہیں آنسو دل میں
    امیر
  • لاتے نہیں نظر میں غلطانی گہر کو
    ہم معتقد ہیں اپنے آنسو ہی کی ڈھلک کے
    میر تقی میر
  • بس یہی سوچ کے پی جاتا ہوں آنسو اے دوست
    جانے کس کس کی نظر دامنِ تر تک پہنچے!
    نامعلوم
  • کس کے آنسو چھپے ہیں پھولوں میں
    چومتا ہوں تو ہونٹ جلتے ہیں
    بشیر بدر
  • بیشتر میں نے خس و خاک سے آنسو پونچھے
    اڑ کے جو چہرے پہ آیا اسے دامن سمجھا
    نسیم دہلوی
  • میری بیداری پہ اُس ظالم کو آیا خاک رحم
    عالم رُویا میں دو آنسو نہ جو رویا کبھی
    شعور
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 29

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter