• لگ گئی جس کو لگن کب وہ پر افسوس جئے
    شمع جلتی ہے سراپا در فانوس لئے
    نصیر دہلوی
  • سن اروپ تیرا برہ ڈانک لگ
    ہوا ہے یو افسوس کی‘ آگ لگ
    میان ستونتی
  • افسوس کوئی نیکی گرہ میں نہیں مری
    لنبے سفر کے واسطے زاد سفر نہیں
    ترانہ مسرت
  • کردیے افسوس وہ روزن ہی جاسوسوں نے بند
    جن میں کچھ تھوڑی سی تھی آنکھیں لڑانے کی جگہ
    انتخاب رامپور
  • افسوس ہوا نے توڑ ڈالا وہ وضو
    اک گھونٹ نے کر دیا وہ روزہ باطل
    دست زرفشاں
  • درک بے ترک سے ہے صد افسوس
    ترک بے درک سے ہزار آوخ
    شاہ کمال
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 12

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter