• افسوس ہے کہ ہم تو رہے مست خواب صبح
    اور آفتاب حشر لب بام آگیا
    مصحفی
  • انسان اپنے آپ میں مجبور ہے بہت
    کوئی نہیں ہے بے وفا افسوس مت کرو
    بشیر بدر
  • سن اروپ تیرا برہ ڈانک لگ
    ہوا ہے یو افسوس کی‘ آگ لگ
    میان ستونتی
  • افسوس کیا کروں ماں اجڑیاں یوبیگا بیگی
    طاقت تبی رہی نیں اس دُکھ سوں دل جلی کا
    ہاشمی
  • افسوس وے شہید کہ جو قتل گاہ میں
    لگتے ہی اُس کے ہاتھ کی تلوار مرگئے
    میر تقی میر
  • نہ معرف نہ آشنا کوئی
    ہم ہیں بے یارو بے دیار افسوس
    میر
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 12

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter