• آبِ نیساں سے آبننا ہے زمیں پر بھی ہووے گا
    بہاراں کی بارش سے سیپو میں موتی،بنسلوچن
    سورداس
  • آج بہت دن بعد سُنی ہے بارش کی آواز
    آج بہت دن بعد کسی منظر نے رستہ روکا ہے
    رِم جِھم کا ملبوس پہن کر یاد کسی کی آئی ہے
    آج بہت دن بعد اچانک آنکھ یونہی بھر آئی ہے
    امجد ‌اسلام ‌امجد
  • آگ کیا ہم کو لگائی ابر نے تیرے بغیر
    وقت بارش اخگر خورشید تف پر ڈالہ تھا
    مومن
  • ہمیشہ اشک کی بارش ہے نخل مژگاں سے
    شب فراق یہ مہوا بلا ٹپکتا ہے
    انتخاب رامپور
  • بے موسم بارش کی صورت، دیر تلک اور دُور تلک
    تیرے دیارِ حُسن پہ میں بھی کِن مِن کِن مِن برسوں گا
    امجد اسلام امجد
  • جتنا خورشید تپے اتنی ہی بارش ہو سوا
    ہووے کیونکر تپش عشق نہ رحمت کی دلیل
    ذوق
First Previous
1 2 3 4 5 6
Next Last
Page 1 of 6

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter