Shair

شعر

ہوتا تھا گاہ گاہے محسوس درد آگے
اب دل جگر ہمارے پھوڑے سے ہیں لپکتے

(میر)

آگے بھی تیرے عشق سے کھینچے تھے درد و رنج
لیکن کسو کے پاس متاع وفا نہ تھی

(میر تقی میر)

یارو نئے موسم نے یہ احسان کیے ہیں
اب یاد مجھے درد پرانے نہیں آتے

(بشیر بدر)

تیرے غم کے سِوا زمانے میں
کون سے درد کا علاج نہیں!

(امجداسلام امجد)

اس کی صحبت میں اے خجستہ خصال
نہیں حاصل بغیر درد و کسل

(ولی)

اس درد کو اب چپ چاپ سہو
انشا جی کہو تو اس سے کہو

(ابنِ انشا)

First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 65

Poetry

Pinterest Share