• آویختہ ہے صید کا دل اس میں موبمو
    لٹکے ہے اس کی زلف کی مانند اس کے بال
    جسونت سنگھ
  • کیا کروں کیونکر رُکوں ناصح ! رکا جاتا ہے دل
    پیش کیا چلتی ہے اس سے جس پہ آجات اہے دل
    مومن
  • ابھی برہم ہوئی بزم تمنا
    یہ کہتی ہے اداسی دل کے گھر کی
    بیخود(محمد احمد)
  • تم بنا دل کو نہیں ہے آرام
    دل کے خانے میں تمہارا ہے مقام
    فائز دہلوی
  • وہ کیا چیز ہے آہ جس کے لیے
    ہر اک چیز سے دل اتھا کر چلے
    میر
  • نظارہ روز و شب ہے مصحف رخسار قاتل کا
    یہی صورت رہی تو بس خدا حافظ مرے دل کا
    اکبر
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 740

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter