• اس لٹک اس شاہ گامی سے نہ کوئے دل میں چل
    تیز ہے گردش لہو کی اے صنم آہستہ تر
    افکار
  • مرغ دل پر بستہ الفت ہے جاوے گا کہاں
    زلف سے کھولے ہے کیوں اے سرو گل اندام دام
    قائم
  • کہتا تھا یہ کہ دل نہ کسی سے لگائیے
    اک قصہ خواںکی رات مجھے کیا خوش آئی بات
    مصحفی
  • خواہش جو شاخِ حرف پہ چٹکی، بکھرگئی
    آنسو جو دل میں بند رہا، وہ گُہر ہوا
    امجد اسلام امجد
  • یہ آیا سوچ اک دن بیٹھے بیٹھے
    کسی کے دل میں جیسے چور بیٹھے
    انشا
  • مہرو اور دورنگی جوسوں میں شکر
    چھُپا دل میں کڑوای کرتی مَکر
    مینا ستونتی
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 740

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter