• ہم غریبوں کی محبت کو حقارت سے نہ دیکھ
    اس زمانے میں کہاں ہوتا ہے پیدا آشنا
    احسان ‌دانش
  • چار دن اپنے محبوں سے محبت کرتے
    لذت عشق بھی چکھتے یہ حسیں تھوڑی سی
    آتش
  • میرے یاراں کی محبت بے گماں
    ڈالتا ہے اس کے دل میں بس بیاں
    باقر آگاہ
  • محبت نے تمھارے دل میں بھی اتنا تو سر کھینچا
    قسم کھانے لگے تب ہاتھ میرے سر پہ دھر بیٹھے
    درد
  • محبت کے مرے دعوے پہ تا ہووے سند مجھ کوں
    لکھیا ہوں صفحہ سینہ پہ خون دل سوں نام اس کا
    ولی
  • اجازت دیجیے رونے کی اب تو دل کی حالت پر
    بہت اچھا میں آمادہ ہو اترک محبت پر
    نقوش مانی
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 71

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter