• یہ ہے طریق محبت یہ ہے شریعت عشق
    یہاں رقیب حرامی کا خون حلال بھی ہے
    الماس درخشاں
  • اب مرے راز محبت کا خدا حافظ ہے
    تبصرے اس نگہہِ ناز تک آپہنچے ہیں
    امید ‌فاضلی
  • محبت بہتی گنگا ہے نہالے جس کی جی چاہے
    نہ بے پایاں بتاتے ہیں نہ ہم پایاب کہتے ہیں
    جگر
  • جزو لاینفک ہوئی جذب محبت کی کشش
    جے پیکاں دل ہمارا تیر مژگاں میں رہا
    سحر (نواب علی)
  • درد دل سوزان محبت محو جو ہو تو عرش پہ ہو
    یعنی دور بجھے گی جاکر عشق کی آگ لگائی ہوئی
    میر تقی میر
  • بازارِ ازل یوں تو بہت گرم تھا‘ لیکن
    لے دے کے محبت کے خریدار ہم ہی تھے
    احسان ‌دانش
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 71

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter