• تاروں کا گو شمار میں آنا محال ہے!!
    لیکن کسی کو نیند نہ آئے تو کیا کرے!!
    احمد ‌ندیم ‌قاسمی
  • نیند ترسے گی میری آنکھوں کو
    جب بھی خوابوں سے دوستی ہوگی
    بشیر بدر
  • اب شورِ حشر مجھ کو جگائے تو غم نہیں
    میں سو لیا لحد میں میری نیند بھر گئی
    بیدم ‌وارثی
  • نہ تھی نیند شہ رات کوں دھاک تے
    چُھٹی آج اس بِھشتِ ناپاک تے
    قطب مشتری
  • بڑی شاہ کو کر یاد روئی پلائی
    وہی درد دکھ میں اسے نیند آئی
    رضوان شاہ و روح افزا
  • کچھ رَت جگے سے جاگتی آنکھوں میں رہ گئے
    زنجیر انتظار کا تھا سلسلہ ، وہ نیند
    امجداسلام امجد
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 16

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter