• دیکھا کچھ اِس طرح سے کسی خُوش نگاہ نے
    رُخصت ہُوا تو ساتھ ہی لیتا گیا وہ ‘ نیند
    امجد اسلام امجد
  • کیا جانے بسا ہے آج کس کے جاکر
    آتی نہیں نیند مجکو تنہا پاکر
    سودا
  • مجکو وحشت کی یہ شادی ہے کہ نیند آتی نہیں
    رت جگا رہتا ہے شب کو خانہ زنجیر میں
    عاشق لکھنوی
  • نیند جب خوابوں سے پیاری ہو‘ تو ایسے عہد میں
    خواب دیکھے کون اور خوابوں کو دے تعبیر کون
    پروین ‌شاکر
  • جب سے آنکھیں لگی ہیں ہماری نیند نہیں آتی ہے رات
    تکتے راہ رہے ہیں دن کو آنکھوں میں جاتی ہے رات
    میر
  • نہ آوے نیند ہمسایاں کوں مرے چلانے تھے
    گلا یو آہ بھرنے تھے ہوا ہے چلچلا یارب
    غواصی
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 16

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter