• رات آئی تو چراغوں نے لویں اکسا دیں
    نیند ٹوٹی تو ستاروں نے لہو نذر کیا
    مصطفےٰ زیدی
  • نہ تھی نیند شہ رات کوں دھاک تے
    چُھٹی آج اس بھِشٹ ناپاک تے
    قطب مشتری
  • رس بھری، نیند کی ماتی پری تمثال کوئی
    مرمریں چھاگلیں، چھنکاتی، ہلورے لیتی
    سلومی
  • خُوشبو کی طرح مُجھ پہ جو بِکھری تمام شب
    میں اُس کی مَست آنکھ سے چُنتا رہا‘ وہ نیند
    امجد اسلام امجد
  • مجکو وحشت کی یہ شادی ہے کہ نیند آتی نہیں
    رت جگا رہتا ہے شب کو خانہ زنجیر میں
    عاشق لکھنوی
  • سوتے وہ کیا کہ حسرت تیغ آزمائی تھی
    بچپن کی نیند نرکسی آنکھوں میں چھائی تھی
    مونس
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 16

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter