• دنیا کے پھول میں توں ، باس وفا کا نہ منگیں
    کہ سبی پھول کوں چوپھر لگے ہیں کانٹے دکھ آمیز
    قلی قطب شاہ
  • ہو جس سے چشم وفا وہ بجز جفا نہ کرے
    کرکے کسی کی تمنا کوئی خدا نہ کرے
    انتخاب رامپور
  • ہیں یہاں مجھ سے وفا پیشہ نہ بیداد کرو
    نہ کرو ایسا کہ پھر میرے تئیں یاد کرو
    میر تقی میر
  • رحم ہو شرم و مروت ہو نہ سنگین دل ہو
    ذی لیاقت ہو وفا دار ہو اور عاقل ہو
    سحر( نواب علی خاں)
  • کس طرح مجھے ہوتا گماں ترکِ وفا کا
    آواز میں ٹھہراؤ تھا لہجے میں روانی
    امجد ‌اسلام ‌امجد
  • پوچھیں ہیں وجہ گریۂ خونیں جو مجھ سے لوگ
    کیا دیکھتے نہیں ہیں سب اس بے وفا کا رنگ
    میر
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 43

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter