• اے کمینے دانت ہے سوہا نہیں
    ہے ادھوری ہونٹ تو اس کا نہیں
    حسن علی خاں
  • میں تو چپ ہوں وہ ہونٹ چاٹے ہے
    کیا کہوں ریجھنے کی جا ہے یہ
    میر
  • مرے دل کو رکھتا ہے شادماں، مرے ہونٹ رکھتا ہے گل فشاں
    وہی ایک لفظ جو آپ نے مرے کان میں ہے کہا ہوا
    امجد اسلام امجد
  • سبب بھوکہہ کے اس میں ماریں گے دانت
    جبھی گرپڑی ہونٹ اور جیبہ آنت
    رمضان
  • دو کالے ہونٹ ، جام سمجھ کر چڑھا گئے
    وہ آب جس سے میں نے وضو تک کیا نہ تھا
    بشیر بدر
  • ہونٹ ہلنے سے بھی پہلے جو یہ اڑجاتا ہے
    جی میں پھرتا ہے مگر لب پہ نہیں آتا ہے
    پیارے صاحب رشید ،
First Previous
1 2 3 4 5 6
Next Last
Page 1 of 6

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter