Shair

شعر

روزی ہوا ہے دانہ زنجیر و آب تیغ
قسمت کا عاشقوں کی یہی آب و دانہ تھا

(الماس درخشاں)

خبر احوال سے میرے ہے حضور آپ کو کیا
میں جو متا ہوں مروں آپ سے دور آپ کو کیا

(الماس درخشاں)

اپنے دل کا ہے مجھے درد جناب ناصح
آپ خاموش رہیں اپ کا کیا جاتاہے

(الماس درخشاں)

گردش میں گرد باد جو کھینچے کچھ آپ کو
خاکہ اڑائے خاک ہمارےغبار کی

(الماس درخشاں)

گر یو نہیں جلتا رہے گا روے آتشناک سے
جلتے جلتے آفتاب اک دن توا ہوجائے گا

(الماس درخشاں)

کیوں باغ پہ ناز باغباں ہے
آخر ہے خزاں بہار کب تک

(الماس درخشاں)

First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 68

Poetry

Pinterest Share