• حسن ہو جس میں وہ ہر شے جلدہ گراس دل میں ہے
    جذبہ صورت پرستی میرے آب وگل میں ہے
    حسرت موہانی
  • اک خلس ہوتی ہے محسوس رگ جاں کے قریب
    آن پہنچے ہیں مگر منزل جاناں کے قریب
    حسرت موہانی
  • جو بگڑنے بھی بنے وہ حسیں
    فکر آرائش جیں نہ کرے
    حسرت موہانی
  • پڑھ کے تیرا خط مرے دل کی عجب حالت ہوئی
    اضطراب شوق نے اک حشر برپا کر دیا
    حسرت موہانی
  • خاصہ بر روح پر فتوح حسین
    نور چشم علی و جان بتول
    حسرت موہانی
  • حیراں نہ میری بھول پہ ہوں خفتگان خاک
    مجبور خود ہوں میں بہ زبان شب برات
    حسرت موہانی
First Previous
1 2 3 4
Next Last
Page 1 of 4

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter