• غالب اپنا یہ عقیدہ ہے بقول ناسخ
    آپ بے بہرہ ہے جو معتقد میر نہیں
    غالب
  • تھی وہ اک شخص کے تصوّر سے
    اب وہ رعنائیِ خیال کہاں
    غالب
  • تیری وفا سے کیا ہو تلافی کہ دہر میں
    تیرے سوا بھی ہم پہ بہت سے ستم ہوئے
    غالب
  • ڈھونڈے ہے اُس مغنئ آتش نفس کو جی
    جس کی صدا ہو جلوۂ برقِ فنا مجھے
    غالب
  • زندگی میں تو وہ محفل سے اٹھادیتے تھے
    دیکھوں اب مرگئے پر کون اٹھاتا ہے مجھے
    غالب
  • زباں پہ بارِ خدایا یہ کس کا نام آیا
    کہ میرے نطق نے بوسے میری زباں کے لئے
    غالب
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 127

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter