ایک شعر ایک محاورہ خیال محاورہ حال گیا احوال گیا پر دل کا خیال نہ گیا اشعار عشق ہمارے خیال پڑا ہے خواب گیا آرام گیا جی کا جانا ثھہر رہا ہے صبح گیا یا شام گیا


Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter