• نہ دو دل میںجگہ اس آرزو کو
    نہ مٹی میں ملاؤآبرو کو
    طلسم
  • اُٹھے ہیں اس کی بزم سے امجد ہزار بار
    ہم ترکِ آرزو کا ارادہ کیے ہُوئے
    امجد اسلام امجد
  • اے داغ آئے پھر گئے وہ اس کو کیا کریں
    پوری جو نامراد تری آرزو نہ ہو
    آفتاب داغ
  • بری ہے عیب سے کب آرزو کلام ترا
    تمام در نہیں ہوتے خوش آب پانی میں
    آرزو
  • غل تھا کہ آرزو ہے شہادت کے تاج کی
    زہرہ کا چاند شام نہ دیکھے گا آج کی
    اوج
  • حسرت ہے اس کو نکلے نہ بسمل کی آرزو
    بوری کرے خدا مرے قائل کی آرزو
    آفتاب داغ
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 21

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter