• حسن تیرا وہ بھبھوکا ہے کہ شب تا بہ سحر
    شمع کے منہ کو لگاتا ہی رہے ہے لوکا
    محب( ولی اللہ)
  • سبزا نہیں آغاز ہو‘ دستا ہے جو اس مکھ اپر
    یو حسن کے مصحف اپر خوش خط اہے ریحاں کا
    ولی
  • یو تحفا حسن عشق کا، مان سوں
    سو بھیجوں دکھن تے خراسان کوں
    دیپک پتنگ
  • حسن سرین سب بیر بہوٹی
    رائے مینی پنجر مہنت چھوٹی
    پدوماوت
  • تھی جو یکتائی کی شان حسن رکھی رہ گئی
    وہ پشیماں سامنے آئینہ رکھ کر ہو گیا
    شعاع مہر
  • نمکیں حسن کا شکار کروں
    کیوں مروں ہلکے پھلکے گوروں سیں
    شاکر ناجی
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 81

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter