Shair

شعر

تج حسن جنت حور تھے منشور نامہ لیا ئیا
منج دور میں بھر دیو تم جوہر و مرجاں عید کا

(محمد قلی قطب)

نین دنبالے علم جھیلے کے نمنے جھولتے
تازہ تازہ رونقاں ظاہر کیا فن عید کا

(قلی قطب شاہ)

سہیلا دوستاں کا وو کہ غم کا سب اثر بھاگیا
خبر لیاہا کوسیاں کا یو زماں ہم عید و ہم نوروز

(قلی قطب شاہ)

شفقِ شام سے خجلت شفقِ صبح کو تھی
لعلِ لب پر جو دھڑی تم نے جمائی شبِ عید

(شہیدی)

حبیب خدا کا‘ خاتم ساروں کا سرتاج
تس لیے مولود باجت گاو‘ عید ہماری آج

(علی محمد جیو گام دھنی)

زلف اور مکھ کے طالب سوں پچھو بات
جسے اردن ہے عید ہر رات شبرات

(ولی)

First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 28
Pinterest Share