• کوئی مقام نظر آگیا جو بن کا سا
    کہا جنون نے یہ ہے مرے وطن کا سا
    شوق قدوائی
  • فراقِ خلد سے گندم ہے سینہ چاک اب تک
    الٰہی ہو نہ وطن سے کوئی غریب جدا
    نامعلوم
  • پڑا ہے اس میں وہ بے جاں وطن سے ہوکے آوارہ
    کہ جس کو فاطمہ نے بر میں پیغمبر کے پلوایا
    سودا
  • منہ سے نت کلمہ کہو ہر دم کرو ذکر دمہ
    یارو وطن کی صفائی کو یہی جاروب ہے
    تراب
  • مجھے آتا ہے رونا اپنی تنہائی پہ اے تاباں
    ہوا ہوں عشق میں بے خانمان چھوٹا وطن میرا
    تاباں
  • لوٹے سمنت خالی رتھ لے کے جب وطن میں
    دشرتھ سے سارا قصہ جاکر کہا بھون میں
    سیتا رام
First Previous
1 2 3 4 5 6 7 8 9 10
Next Last
Page 1 of 11

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter