• نام اُلفت کا نہ لوں گا جب تلک ہے دم میں دم
    تو نے چاہت کا مزا اے فتنہ گر دکھلادیا
    مومن
  • چاہت بتوں کی ہے کہ خدائی کا روگ ہے
    آزاد دیر عشق کے آزار سے ہوا
    رشک
  • ہر جنم میں اسی کی چاہت تھے
    ہم کسی اور کی امانت تھے
    بشیر بدر
  • چل گیا ادنیٰ سے زیور کی ڈلک کا جادو
    جانے کیا سمجھا تھا چاہت کو مری جان تونے
    ابن انشا
  • تم سے راسخ اٹھ سکیں گے صدمے چاہت کے کہاں
    ڈوبتا ہے جی ہمارا نام سن کر چاہ کا
    راسخ
  • ضبط تھا جب تئیں چاہت نہ ہوئی تھی ظاہر
    اشک نے بہ کے مرے چہرے پہ طوفان کیا
    میر تقی میر
First Previous
1 2 3 4
Next Last
Page 1 of 4

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter