• چل گیا ادنیٰ سے زیور کی ڈلک کا جادو
    جانے کیا سمجھا تھا چاہت کو مری جان تونے
    ابن انشا
  • چاہت کی گرفتار بٹیریں، لوے، تیتر
    کبکوں کے تدرووں کے بھی چاہت میں بندھے پر
    نظیر
  • تو جانتا نہیں مری چاہت عجیب ہے
    مجھ کو منا رہا ہے، کبھی خود خفا بھی ہو
    بشیر بدر
  • آنسو کو کبھی اوس کا قطرہ نہ سمجھنا
    ایسا تمہیں چاہت کا سمندر نہ ملے گا
    بشیر بدر
  • کھنجن میں گلنگوں میں بھی چاہت کی مچی جنگ
    دیکھا جو طیوروں نے اسے حسن میں خوش رنگ
    نظیر اکبر آبادی
  • اے بیت مقدس تری عظمت کے دن آئے
    اے چشمہ زمزم تری چاہت کے دن آئے
    انیس
First Previous
1 2 3 4
Next Last
Page 1 of 4

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter