• دانش و عقل و خرد چل دیے سب چاہت میں
    چھٹی پاکر نہ کوئی طفل دبستاں ٹھہرا
    الماس درخشاں
  • اے بیت مقدس تری عظمت کے دن آئے
    اے چشمہ زمزم تری چاہت کے دن آئے
    انیس
  • ہر جنم میں اسی کی چاہت تھے
    ہم کسی اور کی امانت تھے
    بشیر بدر
  • آنکھ چاہت کی ظفر کوئی بھلا چھپتی ہے
    اس سے شرماتے تھے ہم‘ ہم سے وہ شرماتا تھا
    بہار شاہ ظفر
  • جو فکر وصل ہوتی ہے چاہت میں جا بہ جا
    اُس بیقرار نے بھی کیا سب وہ ٹھک ٹھکا
    نظیر
  • سُنی سنائی بات نہیں‘ یہ اپنے اوپر بیتی ہے
    پھول نکلتے ہیں شعلوں سے چاہت آگ لگائے تو
    عندلیب شادانی
First Previous
1 2 3 4
Next Last
Page 1 of 4

Android app on Google Play
iOS app on iTunes
googleplus  twitter